حلقہ این اے 58،پی پی 8اورپی پی 9گوجرخان میں قومی اسمبلی میں پاکستان پیپلز پارٹی اور صوبائی دونوں سیٹیں پی ٹی آئی نے جیت لیں

حلقہ این اے 58،پی پی 8اورپی پی 9گوجرخان میں قومی اسمبلی میں پاکستان پیپلز پارٹی اور صوبائی دونوں سیٹیں پی ٹی آئی نے جیت لیں
مندرہ(زاہد شفیق قریشی سے)حلقہ این اے 58،پی پی 8اورپی پی 9گوجرخان میں قومی اسمبلی میں پاکستان پیپلز پارٹی اور صوبائی دونوں سیٹیں پی ٹی آئی نے جیت لیںحالیہ الیکشن کے رزلٹ حیران کنہیںاور لگتا ھے کہ عوام اب سیاسی جماعتوں کے بجائے کار کردگی ،ترقیاتی کاموں اور شخصیات کو ووٹ پول کر رہے ہیں تفصیل اس اجمال کی کچھ یوں ھے کہ121000سے 2013کا الیکشن جیتنے والے مسلم لیگ ن کے سابق وفاقی پارلیمانی سیکرٹری راجہ جاوید اخلاص اس دفعہ شکست فاش سے دوچار جبکہ سابق الیکشن میں جاوید اخلاص سے بڑی لیڈ ہارنے والے راجہ پرویز اشرف اس دفعہ 125000ووٹ لیکر کامیاب جبکہ دوسرے نمبر پر آنے والے پی ٹی آئی کے امیدوار چوہدری محمد عظیم نے بھی کانٹے کا مقابلہ کرتے ہوئے 96000ووٹ لیے جبکہ پچھلے الیکشن میں پی ٹی آئی کے امیدوار فرحت فہیم بھٹی نے 39000ہزار ووٹ لیے تھے اسی طرح پی پی 9میں حلقہ میں ناقابل شکست سمجھے جانے والے مسلم لیگ ن کے سابق ایم پی اے راجہ شوکت عزیز بھٹی نا اہلی کی وجہ سے خود الیکشن میں حصہ نہ لے سکے اور اپنے بھائی فیصل عزیز بھٹی کو میدان میں اتارا لیکن عوامی رائے نے شوکت عزیزبھٹی کے بھائی کو ان کی جگہ نہ دی اورپچھلے الیکشن میں ہارنے والے پی ٹی آئی کے چوہدری ساجدمحمودگجر کو 51524ووٹ کی واضع برتری سے مسلم لیگ ن کے راجہ حمید،پیپلز پارٹی کے چوہدری سرفراز اور آزاد امیدوار فیصل عزیز بھٹی سے جیت گے اسی طرح پی پی 8کے جیتنے والے چوہدری جاوید کوثر سابق صوبائی وزیر چوہدری محمد ریاض اور پیپلز پارٹی کے خرم پرویز راجہ کو شکست دے کر کامیاب ٹھہرے الیکشن کے یہ نتائجعلاقہ اور عوام کی بہتری کے لیے کیا کردار ادا کریں گے یہ تو آنے والا وقت ہی بتائے گا البتہ مبصرین اسے بدلتی سوچ اور عوامی شعور کی بلوغت قراردے رہے ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں